السبت 17 رجب 1442 هـ
آخر تحديث منذ 2 ساعة 8 دقيقة
×
تغيير اللغة
القائمة
العربية english francais русский Deutsch فارسى اندونيسي اردو Hausa
السبت 17 رجب 1442 هـ آخر تحديث منذ 2 ساعة 8 دقيقة

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته.

الأعضاء الكرام ! اكتمل اليوم نصاب استقبال الفتاوى.

وغدا إن شاء الله تعالى في تمام السادسة صباحا يتم استقبال الفتاوى الجديدة.

ويمكنكم البحث في قسم الفتوى عما تريد الجواب عنه أو الاتصال المباشر

على الشيخ أ.د خالد المصلح على هذا الرقم 00966505147004

من الساعة العاشرة صباحا إلى الواحدة ظهرا 

بارك الله فيكم

إدارة موقع أ.د خالد المصلح

×

لقد تم إرسال السؤال بنجاح. يمكنك مراجعة البريد الوارد خلال 24 ساعة او البريد المزعج؛ رقم الفتوى

×

عفواً يمكنك فقط إرسال طلب فتوى واحد في اليوم.

مسجد میں نماز کا انتظار کرنا زیادہ قدموں سے افضل ہے

مشاركة هذه الفقرة

مسجد میں نماز کا انتظار کرنا زیادہ قدموں سے افضل ہے

تاريخ النشر : 19 صفر 1438 هـ - الموافق 20 نوفمبر 2016 م | المشاهدات : 1379

جناب عالی! مسجد میں نماز کا انتظار کرکے بیٹھنا یا گھر جاکر واپس آنا تاکہ قدموں کے زیادہ ہونے کی وجہ سے ثواب زیادہ ملے ان دونوں میں کون سا افضل ہے؟ اس کے بارے میں آپ ہمیں فتوی دیں ، اللہ آپ کو جزائے خیر دے

الرباط في المسجد انتظارا للصلاة أفضل من كثرة الخطى

حامداََو مصلیاََ ۔۔۔

وعلیکم السلام ورحمۃ اللہ وبرکاتہ

  امابعد۔۔۔

مسجد میں ٹھہرنا زیادہ افضل ہے کیونکہ اس سے رباط مکمل طور پر متحقق ہوجاتاہے ۔ صحیح مسلم کی حدیث (۲۵۱) ہے حضرت ابوہریرہ ؓسے روایت ہے کہ آپنے ارشاد فرمایا:’’میں تم لوگوں کو اس عمل کے بارے میں نہ بتاؤں جس سے اللہ تعالیٰ گناہوں کو معاف کرتاہے اور درجات کو بلند کرتاہے ؟ تو انہوں نے عرض کیا کہ کیو ں نہیں یا رسول اللہ ضرور ارشاد فرمائیں!  تو آپ نے فرمایا کہ ناگواری میں اچھی طرح وضو کرنااور مسجد کی طرف زیادہ قدم اٹھانا اور ایک نماز کے بعد دوسری نماز کے انتظار کرنا یہی رباط ہے رباط ہے ‘‘۔ اور ایک نماز کے بعد دوسری نماز کا انتظار کرنامتحقق کرتا ہے رباط کو یقینی طورپر ان کے لئے جو مسجد میں باقی رہتے ہیں نمازکا انتظار کرتے ہوئے ۔

اور وہ لوگ جو مسجد سے باہر ہوتے ہیں لیکن ان کا دل مسجد میں اٹکا ہوتا ہے تو ان کو اس کا اجرو ثواب ملے گا۔  لیکن جو شخص مسجد میں بیٹھ کرانتظار کرے گا اس کا رتبہ اس سے بلند ہے اور جو چیز اس پردلالت کررہی ہے کہ یہ مسجد میں بیٹھ کر انتظار کرتے ہوئے نما زکا زیادہ قدموں سے وہ آپکا فرمان ہے ۔ بار با ر ذکرنا کہ ’’یہی ربا ط ہے یہی رباط ہے ‘‘یہ اس کے تعظیم کی وجہ سے ہے اوراہمیت کی وجہ سے بیان کرنا تھا۔

آپ کا بھائی

أد.خالد المصلح

16 /1/ 1429هـ

التعليقات (0)

×

هل ترغب فعلا بحذف المواد التي تمت زيارتها ؟؟

نعم؛ حذف