السبت 20 جمادى آخر 1443 هـ
آخر تحديث منذ 3 ساعة 35 دقيقة
×
تغيير اللغة
القائمة
العربية english francais русский Deutsch فارسى اندونيسي اردو Hausa
السبت 20 جمادى آخر 1443 هـ آخر تحديث منذ 3 ساعة 35 دقيقة

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته.

الأعضاء الكرام ! اكتمل اليوم نصاب استقبال الفتاوى.

وغدا إن شاء الله تعالى في تمام السادسة صباحا يتم استقبال الفتاوى الجديدة.

ويمكنكم البحث في قسم الفتوى عما تريد الجواب عنه أو الاتصال المباشر

على الشيخ أ.د خالد المصلح على هذا الرقم 00966505147004

من الساعة العاشرة صباحا إلى الواحدة ظهرا 

بارك الله فيكم

إدارة موقع أ.د خالد المصلح

×

لقد تم إرسال السؤال بنجاح. يمكنك مراجعة البريد الوارد خلال 24 ساعة او البريد المزعج؛ رقم الفتوى

×

عفواً يمكنك فقط إرسال طلب فتوى واحد في اليوم.

مال کو ہلاکت سے بچانے کے لئے نماز کا توڑنا

مشاركة هذه الفقرة

مال کو ہلاکت سے بچانے کے لئے نماز کا توڑنا

تاريخ النشر : 9 ربيع آخر 1438 هـ - الموافق 08 يناير 2017 م | المشاهدات : 706

اگر لوگوں کی ایک جماعت نمازپڑھ رہی ہو اور دورانِ نماز بکریوں کا ریوڑ ان کے کھانے پر یورش کرے تو اس کاکیا حکم ہے کیا ان میں سے کوئی ایک اپنی نماز توڑ سکتا ہے ؟اور اگر نمازیوں میں سے کوئی اس پر تنبیہ کرتے ہوئے بول پڑے تو ا س کا کیا حکم ہے ؟

قطع الصلاة لإنقاذ المال من الهلاك

اما بعد۔۔۔

اللہ کی توفیق سے ہم آپ کے سوال کا جواب یہ دیتے ہیں:

مال کو ہلاکت کو سے بچانے کے لئے نماز کا توڑناجائز ہے ، بعض فقہاء نے اس کی صراحت فرمائی ہے ، اور اس جواز پر آپکا فرمان مبارک شاہد ہے :’’جب کھانا حاضر ہو یا قضائے حاجت(چھوٹے بڑے پیشاب) کی ضرورت ہو تواس وقت نماز نہ پڑھو‘‘ا س کو امام مسلمؒ نے (۵۶۰)میں یعقوب بن مجاہد عن عبداللہ بن محمد بن ابی بکر کے طریق سے حضرت عائشہ ؓ سے نقل کیا ہے اس حدیث میں نماز سے نہی کا جو حکم ہے وہ صرف ایسی چیز سے روکنا ہے جو نماز میں دل کو مشغول رکھے یا نماز کی خشوع و خضوع میں کمی پیدا کرے ،لہٰذا تم میں سے کسی ایک کے لئے اپنے کھانے کی حفاظت کے لئے نماز کا توڑنا جائزہے ۔ باقی رہی بات نماز میں بات کرنے کی تو اگر ایسا بھول یا دہشت و خوف سے ہو تو پھر کوئی حرج نہیں اور اگر قصدو ارادے سے ہو تو پھراس سے نماز باطل ہوجاتی ہے ۔واللہ أعلم۔

آپ کا بھائی

خالد المصلح

13/06/1425هـ

التعليقات (0)

×

هل ترغب فعلا بحذف المواد التي تمت زيارتها ؟؟

نعم؛ حذف