فتوا فارم کے لئے درخواست

غلط کیپچا
×

بھیجا اور جواب دیا جائے گا

×

افسوس، آپ فی دن ایک فتوی بھی نہیں بھیج سکتے.

حج و عمرہ / میں پہلی دفع حج کر رہا ہوں اور اپنی والدہ کے لئے عمرے کی نیت بھی ساتھ کر رہا ہوں اب کیا حکم ہے ؟

میں پہلی دفع حج کر رہا ہوں اور اپنی والدہ کے لئے عمرے کی نیت بھی ساتھ کر رہا ہوں اب کیا حکم ہے ؟

تاریخ شائع کریں : 2016-09-06 | مناظر : 1299
- Aa +

میں عنقریب حجِ تمتع کی نیّت سے حج پرجانے کا ارادہ رکھتا ہوں اورمیں اپنی والدہ کی طرف سے عمرہ کرنا چاہتا ہوں کیا میرے لئے ایسا کرنا جائز ہے جبکہ میں پہلی بار حج کوجارہا ہوں اور اپنی طرف سے پہلے میں عمرہ بھی ادا کرچکا ہوں

أحج لأول مرة وأنوي العمرة لأمي فما الحكم؟

بعدالحمد والصلوۃ:

حجِ تمتع اس حج کو کہا جاتا ہے جس میں  حج کے مہینوں میں عمرہ کے لئے احرام باندھا جائے پھر عمرہ کے اعمال سے فارغ ہونے کے بعد ترویہ کے دِن حج کا احرام باندھا جائے چنانچہ آپ کا اپنی والدہ کی طرف سے عمرہ ادا کرنا حجِ تمتّع ہی کے اعمال میں سے ہے

متعلقہ موضوعات

ملاحظہ شدہ موضوعات

×

کیا آپ واقعی ان اشیاء کو حذف کرنا چاہتے ہیں جو آپ نے ملاحظہ کیا ہے؟

ہاں، حذف کریں