فتوا فارم کے لئے درخواست

غلط کیپچا
×

بھیجا اور جواب دیا جائے گا

×

افسوس، آپ فی دن ایک فتوی بھی نہیں بھیج سکتے.

طھارت / ناخن پالش یا پینٹ کے ساتھ وضو کرنا

ناخن پالش یا پینٹ کے ساتھ وضو کرنا

تاریخ شائع کریں : 2016-11-21 | مناظر : 1631
- Aa +

اگر اعضائے وضو پر پینٹ یا ناخن پالش وغیرہ لگاہو تو اس وضو کا کیا حکم ہے؟ اور اگر وہ نماز پڑھنے کے بعد اسے دیکھ لیتا ہے تو وہ اپنی نماز دہرائے گا؟

الوضوء مع وجود بعض الصبغة والبويا

اللہ تعالی کی توفیق سے ہم اس سوال کے جواب میں کہتے ہیں کہ اس پر واجب ہے کہ وہ اپنی اس نماز کو دہرائے جس میں اس کے اعضائے وضو کو کوئی ایسی چیز لگی ہوجو پانی کو جلد تک پہنچنے سے روکے کیونکہ آپنے ایک آدمی کو دیکھا کہ اس کے پیر پر تھوڑی سے جگہ خشک رہ گئی ہے اور اس پر پانی نہیں ڈالا تھا تو آپنے اس ارشاد فرمایا:’’واپس جاؤ اور اچھی طرح وضو کرو‘‘۔اور ترمذی شریف کی روایت میں ہے :’’واپس جاؤ اور اچھی طرح وضو کرو اورنماز دہراؤ‘‘۔لہٰذا اس پر واجب ہے کہ وہ نمازاور وضو دونوں دوبارہ ادا کرے۔اور جس نے اس کے پیچھے نمازپڑھی ہے ان پر کوئی قضاء نہیں اور ان کی نماز صحیح ہے

متعلقہ موضوعات

آپ چاہیں گے

ملاحظہ شدہ موضوعات

×

کیا آپ واقعی ان اشیاء کو حذف کرنا چاہتے ہیں جو آپ نے ملاحظہ کیا ہے؟

ہاں، حذف کریں