فتوا فارم کے لئے درخواست

غلط کیپچا
×

بھیجا اور جواب دیا جائے گا

×

افسوس، آپ فی دن ایک فتوی بھی نہیں بھیج سکتے.

نماز / نماز میں دعائے قنوت پڑھنے کی جگہ

نماز میں دعائے قنوت پڑھنے کی جگہ

تاریخ شائع کریں : 2017-01-06 | مناظر : 1571
- Aa +

میں نے ایک جگہ امام کے پیچھے مغرب کی نماز پڑھی انہوں نے دوسری رکعت میں دعائے قنوت پڑھی اس کا کیا حکم ہے؟

موضع القنوت في الصلاة

حامداََ و مصلیاََ۔۔۔

اما بعد۔۔۔

اللہ کی توفیق سے ہم آپ کے سوال کا جواب یہ دیتے ہیں:

حدیث سے جو محل قنوت کے لئے ثابت ہے وہ آخری رکعت میں رکوع سے اٹھنے کے بعد ہے۔تو اگر امام نے اس کی مخالفت کی اور دسرے رکعت میں قنوت پڑھ لیا تو ان کو تسبیح کے ذریعے متنبہ کیا جائے یعنی غلطی کی خبر دی جائے۔جیسا کہ نماز کے بعد بتایا جاتا ہے اگر ان کو قنوت کے محل کا پتہ نہ ہو۔

آپ کا بھائی

خالد المصلح

29/03/1424هـ

 

متعلقہ موضوعات

ملاحظہ شدہ موضوعات

×

کیا آپ واقعی ان اشیاء کو حذف کرنا چاہتے ہیں جو آپ نے ملاحظہ کیا ہے؟

ہاں، حذف کریں