فتوا فارم کے لئے درخواست

غلط کیپچا
×

بھیجا اور جواب دیا جائے گا

×

افسوس، آپ فی دن ایک فتوی بھی نہیں بھیج سکتے.

نماز / نمازِ فجر کے بعد طلوعِ آفتاب تک مسجد میں رہنے کی کیا فضیلت ہے ؟

نمازِ فجر کے بعد طلوعِ آفتاب تک مسجد میں رہنے کی کیا فضیلت ہے ؟

تاریخ شائع کریں : 2017-01-08 | مناظر : 1450
- Aa +

نمازِ فجر کے بعد طلوعِ آفتاب تک مسجد میں رہنے کی کیا فضیلت ہے ؟

ما فضل البقاء بعد صلاة الفجر في المسجد حتى طلوع الشمس؟

حامداََ و مصلیاََ۔۔۔

اما بعد۔۔۔

اللہ کی توفیق سے ہم آپ کے سوال کا جواب یہ دیتے ہیں:

مسجد میں نمازِ فجر کے بعد طلوعِ آفتاب تک رہنا آپ ﷺکی مستقل سنت ہے جیسا کہ صحیح مسلم میں حضرت جابر بن سمرہؓ سے مروی ہے کہ :’’ آپﷺجب فجر کی نماز ادا فرماتے تو اپنے مصلے پر بیٹھے رہتے یہاں تک کہ سورج اچھی طرح طلوع ہوجاتا‘‘۔باقی اشراق کے بعد دو رکعت پڑھنا آپﷺکے فعل سے ثابت نہیں ہے اور اس میں ایک حدیث وارد ہے جس کو امام ترمذیؒ نے حضرت انس بن مالکؓ سے روایت کی ہے کہ آپﷺنے ارشاد فرمایا :’’جو فجر کی نماز کی باجماعت پڑھے پھر طلوعِ آفتاب تک اللہ کے ذکر میں بیٹھا رہے اور پھر دو رکعت نماز  پڑھے تو اس کے لئے ایک کامل حج اور ایک کامل عمرے کا ثواب ہے‘‘۔(ایسا تین مرتبہ ارشاد فرمایا )اور ان سے روایت کرکے فرمایا کہ یہ حدیث حسن غریب ہے ۔لیکن جو بات ظاہر ہے وہ یہ کہ حدیث آپﷺسے ثابت نہیں ہے ۔

آپ کا بھائی

خالد بن عبد الله المصلح

19/11/1424هـ

×

کیا آپ واقعی ان اشیاء کو حذف کرنا چاہتے ہیں جو آپ نے ملاحظہ کیا ہے؟

ہاں، حذف کریں