×
العربية english francais русский Deutsch فارسى اندونيسي اردو

خدا کی سلام، رحمت اور برکتیں.

پیارے اراکین! آج فتوے حاصل کرنے کے قورم مکمل ہو چکا ہے.

کل، خدا تعجب، 6 بجے، نئے فتوے موصول ہوں گے.

آپ فاٹاوا سیکشن تلاش کرسکتے ہیں جو آپ جواب دینا چاہتے ہیں یا براہ راست رابطہ کریں

شیخ ڈاکٹر خالد الاسلام پر اس نمبر پر 00966505147004

10 بجے سے 1 بجے

خدا آپ کو برکت دیتا ہے

فتاوی جات / روزه اور رمضان / کیا ناک سے خون بہنے سے روزے پر اثرپڑتا ہے؟

اس پیراگراف کا اشتراک کریں WhatsApp Messenger LinkedIn Facebook Twitter Pinterest AddThis

تاریخ شائع کریں:2017-02-28 07:54 PM | مناظر:2399
- Aa +

کیا ناک سے خون بہنے سے روزے پر اثرپڑتاہے؟

هل يؤثر نزول الدم من الأنف على الصيام؟

جواب

حامداََ و مصلیاََ۔۔۔

اما بعد۔۔۔

اللہ تعالی کی توفیق سے جواب دیتے ہوے ہم عرض کرتے ہے کہ

صحیح قول کےمطابق روزے پر کوئی اثر نہیں ہوتا بلکہ آپ کا روزہ صحیح ہے اور خون کا نکلنا اپنے اختیارسے یا بغیر اختیارکے ہو روزے کوفاسد نہیں کرتا۔ پس اگر بغیر اختیارکے خون نکلنے تو اس بات میں کوئی اختلاف نہیں کہ روزہ فاسد نہیں ہوتا اور جواختلاف ہے وہ اس صورت میں ہے کہ جب پچنہ لگوائے۔ تو بہت سے اہل علم اس بات کی طرف گئے ہیں کہ پچنہ لگوانا روزے کو توڑدیتا ہے۔ لیکن جمہوراس بات پر ہے کہ روزہ پچنہ لگوانے سے نہیں ٹوٹتا۔

اور بات کا خلاصہ یہ ہےکہ بےشک آپ کے ناک سے خون کا نکلنا آپ کے روزے کی صحت پرکوئی اثر نہیں ڈالتا۔


آپ چاہیں گے

ملاحظہ شدہ موضوعات

1.

×

کیا آپ واقعی ان اشیاء کو حذف کرنا چاہتے ہیں جو آپ نے ملاحظہ کیا ہے؟

ہاں، حذف کریں