×
العربية english francais русский Deutsch فارسى اندونيسي اردو

خدا کی سلام، رحمت اور برکتیں.

پیارے اراکین! آج فتوے حاصل کرنے کے قورم مکمل ہو چکا ہے.

کل، خدا تعجب، 6 بجے، نئے فتوے موصول ہوں گے.

آپ فاٹاوا سیکشن تلاش کرسکتے ہیں جو آپ جواب دینا چاہتے ہیں یا براہ راست رابطہ کریں

شیخ ڈاکٹر خالد الاسلام پر اس نمبر پر 00966505147004

10 بجے سے 1 بجے

خدا آپ کو برکت دیتا ہے

فتاوی جات / متفرق فتاوى جات / ایسی مجالس و محافل میں جانا جہاں منکرات ہوں

اس پیراگراف کا اشتراک کریں WhatsApp Messenger LinkedIn Facebook Twitter Pinterest AddThis

تاریخ شائع کریں:2017-03-01 11:38 AM | مناظر:2025
- Aa +

محترم جناب ! السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ۔۔۔ ایسی محفلوں میں شرکت کا کیا حکم ہے جہاں بے حیائی والا لباس ہو ؟ اور کیا یہ ان مجالس کی طرح ہوں گی جہاں گانا بجانا ہوتا ہے ؟

حضور حفلات فيها منكرات

جواب

حامداََ و مصلیاََ۔۔۔

وعليكم السلام ورحمة الله وبركاتہ۔۔۔

اما بعد۔۔۔

اہل علم کااس بات پراتفاق ہے کہ محفل میں اگر ایسا منکر یا گناہ ہو جو اصل کے اعتبار سے گناہ ہے یعنی قطعی گناہ ہے تو ایسی محافل میں شرکت کرنا جائز نہیں ہے ، اور اگر نہ جانے کی وجہ سے قطع رحمی یا کوئی خرابی آنے کا اندیشہ ہو تو ایسی صورت میں معاملہ حکمت اور نرمی کے ساتھ نمٹانا چاہئے ۔ اور یہ امر بھی دعوت الی اللہ ہی کا ایک سبب ہے اور اس شخص سے تعلق بڑھنے کا بھی امکان ہے ، لہٰذا وہ اس کو واضح طور پر بتادے کہ میں اس منکر کی وجہ سے نہیں شرکت کرسکتا اور یہ شخص اس سے مطالبہ بھی کرسکتا ہے کہ اگر ان برائیوں کا ختم کرنا ممکن ہو تو وہ شرکت کرے گا۔

اورپھر یہ کہ اس شخص کا محفل میں شرکت کرنا بھی برائی میں تخفیف کا باعث ہے تو میری رائے یہ ہے کہ شرکت کرے کیونکہ شریعت کا مقصد مصلحت اور اچھائی کا حصول اور اس میں زیادتی ہے اور فساد اور برائی کا سدّباب اور اس میں کمی کرنا ہے لہٰذا اگر ہم کُلّی طور پر برائیوں کو ختم نہ بھی کرسکیں تو کم از کم یہ چاہئے کہ ان میں کمی واقع کردیں ۔ واللہ أعلم۔

آپ کا بھائی

أ.د. خالد المصلح

5 / 3 / 1434هـ


آپ چاہیں گے

ملاحظہ شدہ موضوعات

1.

×

کیا آپ واقعی ان اشیاء کو حذف کرنا چاہتے ہیں جو آپ نے ملاحظہ کیا ہے؟

ہاں، حذف کریں