فتوا فارم کے لئے درخواست

غلط کیپچا
×

بھیجا اور جواب دیا جائے گا

×

افسوس، آپ فی دن ایک فتوی بھی نہیں بھیج سکتے.

متفرق فتاوى جات / عورت کا شعر لکھنا

عورت کا شعر لکھنا

تاریخ شائع کریں : 2017-03-02 | مناظر : 959
FA
- Aa +

اگر ایک عورت شعرلکھتی ہے تو کیا اس کے لئے یہ جائز ہے کہ وہ اپنے اس لکھے ہوئے شعر کو ایک فرضی نام سے نشر کرے ؟ وہ نشر چاہے کتابت کے ذریعہ سے ہو یا انٹرنیٹ کے ذریعہ سے یا وہ خود اسے اپنے اہل وعیال یا رشتہ داروں کے سامنے پڑھ کر ہو؟

كتابة المرأة للشعر

حامداََ و مصلیاََ۔۔۔

اما بعد۔۔۔

اللہ کیتوفیق سے ہم آپ کے سوال کے جواب میں کہتے ہیں کہ

اپنی لکھی ہوئی چیزوں میں فرضی نام استعمال کرنے میں کوئی حرج نہیں وہ استعمال چاہے اخباروں میں ہویا انٹرنیٹ میں یا پھر اس کے علاوہ میں ، لیکن مناسب یہ ہے کہ ناموں سب سے بہترین نام کو اختیار کیا جائے اور اس فرضی نام کو کسی کی عزت پامال کرنے یادھوکہ دینے یااس کے علاوہ دوسرے حرام کاموں کا ذریعہ نہ بنایا جائے کیونکہ اس کا یہ فرضی نام رکھنا اس کو کوئی فائدہ نہیں دے گا کیونکہ اس کا چھپانا اللہ کے ہاں کوئی نفع بخش چیز نہیں ہے ، ا س لئے کہ اللہ تعالیٰ تو آنکھوں کی خیانت اور دلوں کے سربستہ رازوں سے بھی اچھی طرح آگاہ و باخبر ہے ۔

 اور میں اپنے بھائیوں سے یہ ہمدردانہ نصیحت کرتاہوں کہ وہ اللہ تعالیٰ سے ڈریں اور جو بھی وسائل و ذرائع اللہ تعالیٰ کی ناراضگی اور غضب کا سبب بنیں ان سے مقدور بھر کوشش کرکے گریز کیا جائے ۔

×

کیا آپ واقعی ان اشیاء کو حذف کرنا چاہتے ہیں جو آپ نے ملاحظہ کیا ہے؟

ہاں، حذف کریں