فتوا فارم کے لئے درخواست

غلط کیپچا
×

بھیجا اور جواب دیا جائے گا

×

افسوس، آپ فی دن ایک فتوی بھی نہیں بھیج سکتے.

متفرق فتاوى جات / عورت کا اپنی بہن کے علم کے بغیر مال اٹھانا

عورت کا اپنی بہن کے علم کے بغیر مال اٹھانا

تاریخ شائع کریں : 2017-03-02 | مناظر : 1342
FA
- Aa +

میں بڑی مشکل میں ہوں ، میں اور میری بہن اپنے خاندان پر خرچ کرتی ہیں اور وہ اس وجہ سے کہ والد وفات پاچکے ہیں ، اور بعض اوقات خرچ کرنے کی وجہ سے میں اپنی اوپر بڑی تنگی محسوس کرتی ہوں حتی کہ میں بعض اوقات اس کا بعض مال چوری بھی کرنے لگی ، اور میں اپنے آ پ کو یہ کہہ رہی ہوتی ہوں کہ جب میں شادی کر لوں گی تو جتنا مال تم نے چوری کیا ہے اس کے برابر جمع کرلوں گی اور اسے ہدیہ کی شکل میں دے دوں گی ، لہٰذا اس کا کیا حکم ہے؟

أخذتْ مالًا بدون علم أختها

حامداََ و مصلیاََ۔۔۔

اما بعد۔۔۔

اللہ کیتوفیق سے ہم آپ کے سوال کے جواب میں کہتے ہیں کہ

آپ نے جس فعل کا ارتکا ب کیا ہے وہ حرام ہے ، اور حلا ل کی یہ صورت ہے کہ آپ اپنی بہن کے مال میں سے کچھ بھی اس کی اجازت کے بغیر لینے سے رک جائیں ، اور اب تک آپ جو لے چکی ہیں تواس صورت میں آپ پر واجب ہے کہ آپ اسے واپس لوٹادیں ، یااس سے مطالبہ کریں کہ وہ اسے آپ کے لئے حلا ل کردے، رہی بات یہ کہ واپس کرنے کا طریقہ کیا ہے تو اسے اس انداز سے دینا کہ یہ آپ کے لئے ہدیہ ہے تو اس طرح جائز نہیں ہے ، کیونکہ یہ ظاہر احسان ہے اورحقیقت میں آپ اس کا حق واپس کررہی ہیں ، کیونکہ اس صورت میں آپ کے مال خرچ کرنے کے اعتبار سے کوئی فضیلت نہ ہوگی ، اب اس مال کو یہ کہہ کر واپس کرسکتی ہیں ، یہ آپ کا مجھ پر کچھ حق تھا ، یا یہ کہے کہ یہ آپ کا مجھ پر پرانا حق تھا جسے آپ بھول چکے تھے ، اور اسے اپنی چوری کے بارے میں بتاناآپ پر لازم نہیں آتا، اللہ تعالیٰ آپ کے فرسودہ حالات کو خوشحال کرے اور آپ دونوں کے دلوں میں الفت پیدا فرمائے۔ (آمین)

متعلقہ موضوعات

ملاحظہ شدہ موضوعات

×

کیا آپ واقعی ان اشیاء کو حذف کرنا چاہتے ہیں جو آپ نے ملاحظہ کیا ہے؟

ہاں، حذف کریں