فتوا فارم کے لئے درخواست

غلط کیپچا
×

بھیجا اور جواب دیا جائے گا

×

افسوس، آپ فی دن ایک فتوی بھی نہیں بھیج سکتے.

روزه اور رمضان / ایام بیض (ہر مہینے کی ۱۳،۱۴،۱۵ تأریخ) کے روزے رکھنے کی حکمت

ایام بیض (ہر مہینے کی ۱۳،۱۴،۱۵ تأریخ) کے روزے رکھنے کی حکمت

تاریخ شائع کریں : 2017-04-08 | مناظر : 1768
- Aa +

اسلامی مہینوں کی ۱۳،۱۴،۱۵ تأریخ جنہیں ایام بیض کہا جاتا ہے، ان دنوں میں روزہ رکھنے کی کیا حکمت ہے؟

الحكمة من صيام أيام البيض

حمد و ثناء کے بعد۔۔۔

بتوفیقِ الہٰی آپ کے سوال کا جواب درج ذیل ہے:

ایام بیض کے روزوے مشروع ہونے میں حکمت یہ ہے کہ امت زیادہ سے زیادہ نیک عمل کر کے زیادہ سے زیادہ خیر حاصل کر سکے جو کہ عظیم اجر کا باعث بنے، ان دنوں کے روزوں کی علت کے بارے میں یہ بھی کہا گیا ہے: کہ یہ اللہ تعالی کا شکر ادا کرنے کا طریقہ ہے کہ اس نے لوگوں کے نفع سے بھر پور چاند کو ان دنوں میں کمال روشنی عطا فرمائی، ایک قول یہ بھی ہے: کہ یہ اس وجہ سے ہے کہ چاند کے پورا ہونے پر خون انسان کی رگوں میں تیز دوڑنے لگتا ہے تو روزے کو مشروع کیا گیا ہے تاکہ شیطان پر دائرہ تنگ کیا جا سکے کیونکہ وہ انسان کی رگوں میں خون کی طرح دوڑتا ہے جیسا کہ بخاری (۲۰۳۸) اور مسلم(۲۱۷۴) میں زہری عن علی بن حسین عن صفیہؓ کے طری سے مروہ ہے کہ نبی نے فرمایا: ((شیطان انسان کی رگوں میں ایسے ہی دوڑتا ہے جیسے خون دوڑتا ہے))، واللہ اعلم۔

آپ کا بھائی

خالد المصلح

23/03/1425هـ

متعلقہ موضوعات

آپ چاہیں گے

ملاحظہ شدہ موضوعات

×

کیا آپ واقعی ان اشیاء کو حذف کرنا چاہتے ہیں جو آپ نے ملاحظہ کیا ہے؟

ہاں، حذف کریں