×
العربية english francais русский Deutsch فارسى اندونيسي اردو

خدا کی سلام، رحمت اور برکتیں.

پیارے اراکین! آج فتوے حاصل کرنے کے قورم مکمل ہو چکا ہے.

کل، خدا تعجب، 6 بجے، نئے فتوے موصول ہوں گے.

آپ فاٹاوا سیکشن تلاش کرسکتے ہیں جو آپ جواب دینا چاہتے ہیں یا براہ راست رابطہ کریں

شیخ ڈاکٹر خالد الاسلام پر اس نمبر پر 00966505147004

10 بجے سے 1 بجے

خدا آپ کو برکت دیتا ہے

فتاوی جات / احکام میت / عدت میں کالا رنگ پہننے کا حکم

اس پیراگراف کا اشتراک کریں WhatsApp Messenger LinkedIn Facebook Twitter Pinterest AddThis

تاریخ شائع کریں:2017-05-16 08:57 AM | مناظر:1681
- Aa +

کیا ہمارے دین میں میت کے جانے پر کالے کپڑے پہننے کی کوئی اصل ہے؟

حكم لبس السواد حداداً

جواب

شروع کرتا ہوں اللہ کے نام سے جو بڑا مہربان نہایت رحم والا ہیں۔

شریعت میں مصائب کے وقت کالے کپڑے پہننے کی کوئی اصل نہیں ہے اور نہ ہی صحابہ ؓ کے زمانے سے ایسی کوئی صورت ملتی ہے، بعض فقہاء نے عدت والی عورت کیلئے اسے پسند کیا ہے کیوں کہ اس میں زینت نہیں ہے، جبکہ صحیح یہ ہے کہ کالے رنگ میں سے کچھ ایسے ہوتے ہیں جو زینت میں شمار ہوتے ہیں لہذا اس کا پہننا جائز نہیں ہے وہ باقی رنگوں والے حکم میں ہی ہوگا۔

آپ کا بھائی/

خالد المصلح

07/06/1425هـ


آپ چاہیں گے

ملاحظہ شدہ موضوعات

1.

×

کیا آپ واقعی ان اشیاء کو حذف کرنا چاہتے ہیں جو آپ نے ملاحظہ کیا ہے؟

ہاں، حذف کریں