فتوا فارم کے لئے درخواست

غلط کیپچا
×

بھیجا اور جواب دیا جائے گا

×

افسوس، آپ فی دن ایک فتوی بھی نہیں بھیج سکتے.

​زکوٰۃ / بھائی اور والدین کو زکوٰۃ دینے کا حکم

بھائی اور والدین کو زکوٰۃ دینے کا حکم

تاریخ شائع کریں : 2017-05-17 | مناظر : 1297
- Aa +

بھائی اور والدین کو زکوٰۃ دینے کا کیا حکم ہے؟

دفع الزكاة للأخ والوالدين

حمد و ثناء کے بعد۔۔۔

 بتوفیقِ الٰہی آپ کے سوال کا جواب پیشِ خدمت ہے:

بھائی اور والدین کو زکوٰۃ دینا دو شرطوں کی رُو سے جائز ہے:

پہلی شرط یہ کہ وہ بھائی تنگدست و فقیر اور زکوٰۃ کا حقدار ہو۔

دوسری شرط یہ کہ اس پر ان کا نفقہ واجب نہ ہو اس لئے کہ اگر بھائی اور والد پر نفقہ واجب ہو تو پھر ان دونوں کو زکوٰۃ دینا جائزنہیں ہے ۔

اور جس حالت میں بھائی کو نفقہ دینا جائز ہے تو یہ وہ حالت ہے کہ جب وہ نفقہ دینے پر قادر ہو اور اس کا بھائی کا کوئی آل وعیال نہ ہو ، اور وہ اس کا وارث بھی بنتا ہو اگر یہ سب صورتیں ہوں تو پھر اس کو نفقہ دینا واجب ہے

متعلقہ موضوعات

ملاحظہ شدہ موضوعات

×

کیا آپ واقعی ان اشیاء کو حذف کرنا چاہتے ہیں جو آپ نے ملاحظہ کیا ہے؟

ہاں، حذف کریں