فتوا فارم کے لئے درخواست

غلط کیپچا
×

بھیجا اور جواب دیا جائے گا

×

افسوس، آپ فی دن ایک فتوی بھی نہیں بھیج سکتے.

​زکوٰۃ / حلقۂ قرآن میں بچوں کو حفظ کرانے والے کو زکوٰۃ دینے کا حکم

حلقۂ قرآن میں بچوں کو حفظ کرانے والے کو زکوٰۃ دینے کا حکم

تاریخ شائع کریں : 2017-05-18 | مناظر : 1159
- Aa +

حلقۂ قرآن میں جو بچوں کو حفظ کرائے کیا اس کو زکوٰۃ دینا جائز ہے ؟

دفع الزكاة لمن يحفِّظ التلاميذ في حلقة القرآن

حمد و ثناء کے بعد۔۔۔

مستحقینِ زکوٰۃ کو اللہ تعالیٰ نے قرآن کریم میں ذکر کرتے ہوئے ارشاد فرمایا: ﴿بے شک صدقات فقراء ، مساکین ، صدقات پر کام کرنے والوں ، نئے اسلام لانے والوں کی دلجوئی ، غلاموں ، قرضداروں ، اللہ کے راستے میں چلنے والے مجاہدین اور راہگیر مسافروں کے لئے ہیں ، یہ اللہ کی طرف سے فرض ہے اوراللہ بہت علم والا اور بہت حکمت والا ہے﴾ [التوبہ: ۶۰

اب اس آیتِ مبارکہ کو مدِّ نظر رکھتے ہوئے اگر وہ قرآن پڑھانے والا ان مذکورہ طبقات میں سے ہو تو پھر اس کو زکوٰۃ دینا جائز ہے وگرنہ نہیں

×

کیا آپ واقعی ان اشیاء کو حذف کرنا چاہتے ہیں جو آپ نے ملاحظہ کیا ہے؟

ہاں، حذف کریں