فتوا فارم کے لئے درخواست

غلط کیپچا
×

بھیجا اور جواب دیا جائے گا

×

افسوس، آپ فی دن ایک فتوی بھی نہیں بھیج سکتے.

شریعت اور سیاست / صفتِ رجم کے متعلق سوالات

صفتِ رجم کے متعلق سوالات

تاریخ شائع کریں : 2017-05-20 | مناظر : 1128
- Aa +

۱- کیا اسلام نے رجم کے لئے کچھ شرائط محدود کی ہے، جبکہ آپ اچھی طرح جانتے ہیں کہ عورت کو کسی بھی قسم کی سزا دیتے وقت اسے خوب پردہ میں رکھنا چاہئے ؟ ۲- کیا زانی مرد اور عورت کو سنگسار کرتے وقت اللہ کے رسولﷺ نے بڑا یا چھوٹا ہونے کے اعتبار سے پتھر کاکوئی سائز مقرر فرمایا ہے ؟ ۳- کیا رجم کے وقت اللہ کے رسول ﷺنے کسی فاصلے کی تحدید کی ہے ؟ ۴- کیا عورت کو کھڑے ہوکر سنگسار کیا جائے گا یا بیٹھ کر اسی طرح مرد کو کھڑے ہوکر سنگسار کیا جائے گا یا بیٹھ کر ؟

أسئلة حول صفة الرجم

حمد و ثناء کے بعد۔۔۔

 بتوفیقِ الٰہی آ پ کے سوال کا جواب پیشِ خدمت ہے:

  ۱- جی ہاں ، رجم کے باقاعدہ اپنی شرائط ہیں جن کو علماء نے اپنی تالیفات میں وضاحت سے بیان کیا ہے لہٰذا آپ حدّ الزنا کی کتاب میں خود اس کا مراجعہ کریں۔

  ۲- باقی رہا پتھر کے سائز کا سوال تو اس کے بارے میں اللہ کے رسولکی طرف سے کوئی تحدید منقول نہیں ہے ، لیکن اہل علم نے اتنا لکھا ہے کہ وہ پتھر معتاد ہونا چاہئے جسے پھینکنے والا آسانی سے بلا مشقت پھینک سکے یعنی نہ تو اتنا بڑاہو کہ ایک ہی وار سے اسے ختم کردے اور نہ اتنا چھوٹا ہو جو اس کی تکلیف کا باعث بنے۔

  ۳- اور رجم کی مسافت کے بارے میں آپسے کوئی صراحت منقول نہیں ہے ۔

  باقی رہا عورت کی صفت کا سوال کہ رجم کرتے وقت کس طرح ہونی چاہئے تو اس کے بارے میں صحیح مسلم میں حضرت بریرہؓ سے منقول ہے کہ غامدیہؓ کو جب سنگسار کیا جانے لگا تو آپنے اس کے لئے ایک گڑھا کھودنے کا حکم دیا جس میں اسے سینے تک دبایا جاسکے اور پھر لوگوں کو حکم دیا کہ اس کو سنگسار کرو ۔ واللہ أعلم

آپ کا بھائی/

خالد المصلح

25/09/1424هـ

×

کیا آپ واقعی ان اشیاء کو حذف کرنا چاہتے ہیں جو آپ نے ملاحظہ کیا ہے؟

ہاں، حذف کریں