فتوا فارم کے لئے درخواست

غلط کیپچا
×

بھیجا اور جواب دیا جائے گا

×

افسوس، آپ فی دن ایک فتوی بھی نہیں بھیج سکتے.

البيوع / ماسٹر کریڈٹ کارڈ اور ویزا کریڈٹ کارڈ

ماسٹر کریڈٹ کارڈ اور ویزا کریڈٹ کارڈ

تاریخ شائع کریں : 2017-05-25 | مناظر : 1054
- Aa +

میں ایک کمپنی میں ملازم ہوں، اور کبھی کبھار کام کے سلسلے میں مجھے ملک سے باہر جانا پڑتا ہے،وہاں پر ہوٹل میں کمرہ لینے کے لئے وہ ویزا کارڈ مانگتے ہیں ، تو کیا میں بینک راجحی سے ویزا کارڈ لے سکتا ہوں؟

بطاقة الائتمان فيزا ماستركارد

حمد و ثناء کے بعد۔۔۔

بتوفیقِ الہٰی آپ کے سوال کا جواب درج ذیل ہے:

ویزا کارڈ لینے میں کوئی حرج نہیں جب تک یہ سود سے پاک ہو، جہاں تک مجھے معلوم ہے کہ بینک راجحی اور اس طرح کے اور بینک جو اسلامک بینکنگ کے اصولوں پر چلتا ہو ، ان سے ویزا کارڈ لینے میں کوئی حرج نہیں، کیونکہ یہ لوگ قرضہ بھرنے میں تأخیر کی وجہ سے سود یا زائد پیسے نہیں لیتے، لہٰذا ان کارڈز کے ذریعے ہوٹل میں کمرہ لینا یا شاپنگ وغیرہ کرنے میں کوئی مسئلہ نہیں

متعلقہ موضوعات

آپ چاہیں گے

ملاحظہ شدہ موضوعات

×

کیا آپ واقعی ان اشیاء کو حذف کرنا چاہتے ہیں جو آپ نے ملاحظہ کیا ہے؟

ہاں، حذف کریں