فتوا فارم کے لئے درخواست

غلط کیپچا
×

بھیجا اور جواب دیا جائے گا

×

افسوس، آپ فی دن ایک فتوی بھی نہیں بھیج سکتے.

البيوع / سُودی بینکوں میں ملازمت کرنے کا حکم

سُودی بینکوں میں ملازمت کرنے کا حکم

تاریخ شائع کریں : 2017-06-30 03:14 PM | مناظر : 358
- Aa +

سوال

سُودی بینکوں میں ملازمت کرنے کا کیا حکم ہے؟

العمل في البنوك الربوية

جواب

حمد و ثناء کے بعد۔۔۔

 بتوفیق الٰہی آپکے سوال کا جواب پیشِ خدمت ہے:

اہل علم کی ایک بڑی جماعت کا اس بارے میں یہ فتوی ہے کہ سُودی بینکوں میں تمام کام حرام ہیں ، اور تمام کاموں کی حرمت کی وجہ یہ ہے کہ ان کاموں کا سُود کے ساتھ کسی درجہ تعلق ہوتا ہے، اس لئے بھی کہ سُود ہی تمام سُودی بینکوں کا روحِ رواں ہوتا ہے، اس میں تمام کام اگرچہ وہ ایک دوسرے سے مختلف ہوں لیکن وہ کسی نہ کسی درجہ میں سُود کی خدمت کرتے ہیں ۔

بعض علماء نے سُود کے ساتھ بالواسطہ تعلق رکھنے اور بلاواسطہ تعلق رکھنے میں فرق کیا ہے، لیکن جہاں تک مجھے لگ رہا ہے تو میری رائے یہ ہے کہ سُودی بینکوں سے دُوری انسان کے لئے حلال رزق اور اطمینانِ خاطر کا سبب ہے اس لئے کہ سُود کی برائی دین و دنیا کے فساد کے اسباب کا ایک بہت بڑا سبب ہے، لہٰذا یہی بہتر ہے کہ آپ کوئی اور کام تلاش کریں اگرچہ اس سے آپ سے بعض منافع چلے جائیں ۔

اللہ تعالیٰ ہم سب کو خیر کی توفیق دے

ملاحظہ شدہ موضوعات

×

کیا آپ واقعی ان اشیاء کو حذف کرنا چاہتے ہیں جو آپ نے ملاحظہ کیا ہے؟

ہاں، حذف کریں